All posts by Faisal Khan

وزیر اعظم عمران خان دنیا کے واحد لیڈر ہیں جو بار بار مظلوم کشمیریوں کے حق میں کھڑے ہوئے

وزیر اعظم عمران خان دنیا کے واحد لیڈر ہیں جو بار بار مظلوم کشمیریوں کے حق میں کھڑے ہوئے

لاہور: ہم عمران خان کا مرتے دم تک ساتھ دیں گے،

لاہور: عمران خان ہمیشہ نمبر 1 رہیں گے …گلوکار سلمان احمد

ننھے بچے کے سامنے نانا کو شہید کرنے پر پاکستانی فنکار بھی میدان میں آگئے،سخت الفاظ میں مذمت

لاہور(ویب ڈیسک) کیسے دنیا اس واقعے پر خاموش بیٹھ سکتی ہے ۔ انڈین فوج کو کیسے ان واقعات پر استثنی دیا جاسکتا ہے ۔ آخر کب تک ایسے واقعات پر آنکھیں بند رکھی جائیں گی ۔ ایسے واقعات کو روکنا ہوگا، کشمیریوں کی زندگی بھی اہمیت رکھتی ہے۔
علاوہ ازیں گلوکار فرحان سعید کا کشمیر میں قابض بھارتی فورسز کی بربریت پر بیان ۔کشمیر میں بے رحمانہ واقعے پر دنیا کی کشمیریوں کی حالت زار پر بے حسی ظاہر کرتی ہے ۔ میری ہمدردیاں بشیر اور 3 سالہ بچے سہیل کے اہل خانہ کے ساتھ ہیں۔

سوپور میں بھارتی فوج کی سفاکیت، اداکار شان شاہد کا اظہار مذمت ، کیا بھارت اس شرم ناک واقعے پر شرمندہ نہیں، شان شاہد ۔ ان لوگوں پر بھی افسوس ہوتا ہے جو اس نسل کشی کے وقت خاموش رہے، کشمیر میں انسانوں جاری ظلم کو ختم کیا جائے ، شان شاہد

’پب جی گیم میں ناکامی‘، ایک اور نوجوان نے خود کشی کرلی

لاہور(ویب ڈیسک) پنجاب ہاو¿سنگ سوسائٹی میں بڑے پیمانے پر کھیلے جانے والے آن لائن گیم میں ایک ٹاسک مکمل کرنے میں ناکامی کے بعد ایک اور نوجوان لڑکے نے خودکشی کرلی۔ رپورٹ کے مطابق اٹھارہ سالہ شہریار کو چھت کے پنکھے سے لٹکا پایا گیا اور اس کے جسم کے پاس ایک خود کشی کا نوٹ لکھا تھا جس پر لکھا تھا جس میں اس نے پلیئر ان نون بیٹل گراو¿نڈ (پب جی) کو ’قاتل آن لائن گیم‘ قرار دیا تھا۔کینٹ ڈویڑن کے سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس پی) فرقان بلال نے میڈیا کو بتایا کہ لڑکے ایک نامعلوم لڑکی کو انتہائی قدم اٹھاتے ہوئے دکھانے کے لیے ویڈیو کال بھی کی تھی۔ایس پی نے بتایا کہ لڑکا اپنے بھائی کے ساتھ پنجاب ہاو¿سنگ سوسائٹی میں کرائے کے کوارٹر میں رہتا تھا۔انہوں نے بتایا کہ جب لڑنے کے خودکشی کی اس وقت اس کا بھائی گھر پر نہیں تھا،انہوں نے کہا کہ پولیس نے فرانزک تجزیہ کرنے کے لیے اس کا مبینہ خودکشی کا نوٹ اور موبائل فون ضبط کرلیا ہے۔انہوں نے کہا کہ شہریار کا بھائی ایک سیلز مین تھا اور پولیس اس لڑکی تک رسائی حاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے جسے لڑکے نے خود کو پھانسی پر لٹکانے سے قبل ویڈیو کال کی تھی۔ایس پی نے مزید کہا کہ ’ہم ایک دکاندار سے بھی تفتیش کریں گے جو پب جی گیم میں اس کا پارٹنر تھا‘۔مبینہ خودکشی کے نوٹ میں لڑکے نے اپنی موت کی ایک وجہ کو پب جی بتایا تھا اور اس نے اپنی غلطیاں کرنے پر دکاندار سے معافی مانگی تھی۔خیال رہے کہ رواں ماہ کا یہ تیسرا واقعہ ہے جس میں ایک کم سن لڑکے نے پب جی کھیلتے ہوئے اپنی زندگی کا خاتمہ کیا۔آن لائن گیم پر پابندی کے لیے لاہور پولیس نے پہلے ہی انسپیکٹر جنرل پولیس کے ذریعہ اعلی حکام کے سامنے یہ معاملہ اٹھایا تھا۔ڈپٹی انسپکٹر جنرل (آپریشنز) اشفاق احمد خان کی سفارشات پر لاہور سٹی پولیس آفیسر نے اس سلسلے میں ایک خط بھی لکھا تھا۔خیال رہے کہ چند ماہرین کے مطابق پب جی بچوں کی ذہنی صحت کو متاثر کررہا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ متعدد ممالک اسی طرح کی شکایات پر کھیل پر پابندی لگانے کی کوششیں کر رہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ اس سے قبل ایک اور ’بلیو وہیل چیلنج‘ نامی آن لائن ’خودکشی پر ابھارنے والے گیم‘ کی اطلاع دی گئی تھی جس کے ذریعے نوجوانوں کو 50 روز کے لیے 50 ٹاسک دیا جاتا تھا۔

کالعدم تنظیم بی ایل اے نے پاکستان سٹاک ایکسچینج پر حملہ کرنے والے چاروں دہشت گردوں کی تصاویر جاری کر دی

کالعدم تنظیم بی ایل اے نے پاکستان سٹاک ایکسچینج پر حملہ کرنے والے چاروں دہشت گردوں کی تصاویر جاری کر دی دہشت گرد تنظیم بی ایل اے نے پیر کی صبح پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر حملہ کرنے والے تمام 4 دہشت گردوں کی تصاویر اور نام جاری کردیئے۔ تسلیم بلوچ ، شہزاد بلوچ ، سلمان ہمل اور سراج کنگور ان دہشت گردوں کے نام ہیں۔

نوجوانوں کو کورونا سے زیادہ خطرہ ، مزید 83 اموات، 4072 نئے کیسزاسمارٹ لاک ڈاﺅن بڑھانے کا فیصلہ

لاہور: (ویب ڈیسک) پنجاب میں کورونا کے مریضوں کی اکثریت نوجوانوں کی ہے۔ محکمہ صحت کے اعداد و شمار کے مطابق 75 سال سے زائد عمر کے افراد کورونا سے سب سے کم متاثر ہوئے ہیں، نوجوانوں میں لڑکیوں کے برعکس لڑکے زیادہ متاثر ہیں، مردوں میں 51 ہزار 80 کورونا کے شکار، 50 ہزار 81 مشکوک کیسز ہیں جبکہ خواتین میں 23 ہزار 70 کورونا سے متاثر، 19 ہزار 89 مشتبہ مریض رپورٹ ہوئے۔محکمہ صحت کی رپورٹ کے مطابق پنجاب میں کورونا سے سب سے زیادہ متاثرہ افراد 31 سے 45 سال کے ہیں، 31 سے 45 سال کے 22 ہزار 978 نوجوان کورونا سے متاثر ہیں، 16 سے 30 سال کی عمر کے 21 ہزار 285 افراد کورونا کا شکار ہیں، 46 سے 60 سال کے 15 ہزار 897 افراد کورونا کا شکار ہیں، 61 سے 75 سال کے 7 ہزار665 افراد کورونا متاثرین ہیں، سب سے کم ضعیف العمر 75 سال سے زیادہ عمر کے افراد ہیں۔پنجاب میں 75 سال سے زائد عمر کے افراد کی تعداد فقط 1319 ہے، وائس چانسلر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز پروفیسر جاوید اکرم کا کہنا ہے کہ کوروناوائرس سے پنجاب میں زیادہ تر اموات 50 سال سے زائد افراد کی ہوئی ہیں جن کو ہائی بلڈ پریشر، ذیابیطس سمیت مہلک بیماریاں لاحق تھیں۔

 کراچی میں پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر دہشت گردوں کا حملہ

کراچی: پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر دہشت گردوں نے حملہ کردیا۔پولیس کے مطابق 4 مسلح افراد نے پہلے اسٹاک ایکسچینج کے گیٹ پر دستی بم حملہ کیا جس کے بعد فائرنگ کی۔پولیس ذرائع کا کہنا ہےکہ دستی بم حملے اور فائرنگ میں 4 افراد زخمی ہوئے ہیں جن میں پولیس اہلکار، اسٹاک ایکسچینج کا سیکیورٹی گارڈ اور 2 شہری شامل ہیں جنہیں فوری طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔پولیس ذرائع کا بتانا ہےکہ دہشت گردوں کے حملے میں 2 شہری جاں بحق بھی ہوگئے ہیں۔پولیس حکام کا بتانا ہےکہ سیکیورٹی اہلکار اسٹاک ایکسچینج میں داخل ہوچکے ہیں اور جوابی کارروائی میں 3 دہشت گردوں کو ہلاک کیا جاچکا ہے جب کہ ایک دہشت گرد اب بھی اسٹاک ایکسچینج کے اندر موجود ہے جس کی تلاش کے لیے سرچ پریشن جاری ہے۔سیکیورٹی اہلکاروں نے قریبی علاقوں کا بھی مکمل محاصرہ کرلیا ہے جب کہ حملے کے بعد آئی آئی چندریگر روڈ کو میری ویدرٹاور اور شاہین کمپلیکس سے ٹریفک کے لیے بند کر دیا ہے۔ریسکیو حکام کے مطابق حملے میں اب تک 5 ہلاکتیں ہوئی ہیں جن میں 2 عام شہری جاں بحق ہوئے جب کہ 3 دہشت مارے گئے ہیں۔سیکیورٹی ذرائع کا کہنا ہےکہ دہشت گرد جدید اسلحہ سے لیس تھے اور ان کے پاس بارودی مواد سے بھری جیکٹیں بھی موجود تھیں۔

چائینیز، پاکستانی اور کورین ہیکرز کا بھارتی ویب سائٹس پر حملہ : بھارتی میڈیا کا واویلا

(ویب ڈیسک)گزشتہ روز چائنہ,کوریا اور پاکستانی نامعلوم ہیکرز کی کاروائی کو بھارت لداخ پر چائنا کے فوجی حملے سے بھی بڑا تصور کر رہا ہے۔کرونا کے بارے میں ہیکرز نے انڈیا کی اگلے دو مہینے کی ضروریات کی اشیاءکے بارے میں معلوماتی ڈیٹا اکٹھا کیا.اب وہی اشیاءکم قیمت پر بنا کر چائنا مختلف ممالک کے زریعے انڈیا کو بیچ کر پیسہ کمائے گا۔اور دوسری طرف نامعلوم پاکستانی ہیکرز نے لائن آف کنٹرول شاہراہ قراقرم پر سی پیک ہائی وے کو کاٹنے کے انڈین منصوبے اور غیر قانونی تعمیرات کا ڈیٹا چوری کر کے چائنا کے حوالے کیا جس پر چائنا نے انڈیا اور چائنا کی Disputed Territory پر حملہ کر کے انڈیا کو سبق سکھایا اور اب چائنا مقبوضہ کشمیر کو چھڑانے کی باتیں کر رہا ہے.انڈین میڈیا یہی کہہ رہا ہے کہ پاکستانی ہیکرز نے انڈیا کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے۔

دنیا میں کورونا کے ایک کروڑ مریض پاکستان میں 2 لاکھ افراد متاثر امریکہ پہلے، برازیل دوسرے ، روس تیسرے ، بھارت چوتھے اور برطانیہ پانچویں نمبر پر آگیا

(ویب ڈیسک)دنیا بھر میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ سے زائد ہوگئی ہے اور 5 لاکھ افراد اس مہلک وبا کی وجہ سے ہلاک ہو چکے ہیں۔گزشتہ ہفتے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے خبردار کیا تھا کہ آئندہ ہفتے تک دنیا بھر میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ تک پہنچ سکتی ہے۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق کورونا وائرس کے مجموعی کیسوں میں آدھی تعداد دو براعظموں شمالی اور جنوبی امریکا میں سامنے آئی ہے۔کورونا سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ملک امریکا میں وائرس سے ہلاک افراد کی تعداد ایک لاکھ 20 ہزار سے بھی تجاوز کر گئی ہے ہے اور مریضوں کی تعداد 26 لاکھ کے قریب پہنچ گئی۔ امریکا کے بعد کورونا سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک برازیل ہے جہاں مریضوں کی تعداد 13 لاکھ سے زائد جب کہ ہلاکتوں کی تعداد 57 ہزار سے زائد ہو چکی ہے۔ روس 6 لاکھ سے زائد کیسز اور 9 ہزار کے قریب ہلاکتوں کی وجہ سے تیسرے نمبر جب کہ بھارت 5 لاکھ سے زائد کیسز اور 16 ہزار اموات کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہے۔برطانیہ میں بھی کورونا وائرس سے 43 ہزار سے زائد مریض انتقال کرچکے ہیں جب کہ متاثرہ افراد کی تعداد 3 لاکھ 10 ہزار سے زائد ہے۔یاد رہے کہ جہاں کورونا وائرس کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے وہیں اس مہلک وائرس کو شکست دے کر صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد بھی 54 لاکھ بڑھ گئی ہے۔

لداخ گلوان،پیانگ جھیل کے بعد بوٹل نک میں بھی بڑی تعداد میں چینی فوج تعینات


لداخ گلوان،پیانگ جھیل کے بعد بوٹل نک میں بھی بڑی تعداد میں چینی فوج تعینا
سفارتی سطح پر جاری مزاکرات کے باوجود چین بھارت کشیدگی میں اضافہ، بھارت بھی فوج بھیجے گا
چین نے فوجی گاڑیوں کے ساتھ ساتھ بھاری جنگی سامان بھی پہنچا دیا، 2013میں فوجی ٹینٹ لگا لئے تھے
بوٹل نک کے علاقے میں جس جگہ پر چینی فوج موجود ہے، بھارتی حدود میں 18کلومیٹر اندر ہے؛بھارتی میڈیا
گلوان وادی میں چینی فوج کی تعمیر اتی سرگرمیاں جاری، پیانگ جھیل میں بھی پوزیشن مضبوط ہے:سابق بھارتی وزیر دفاع کااعتراف
آن لائن پول میں بھارتی شہریوں نے مودی کوچین کے مقابلے میں کمزور قرار دے دیا

گالیان مجھے پڑرہی ہیں بھاگنے والوں سے حساب مانگا جائے گا اپوزیشن سے دشمنی نہیں حساب ہو گا،؛عمران خان

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کورونا کے حوالے سے اگردنیا میں کسی ملک کے فیصلوں میں کنفیوژن نہیں تھی تووہ پاکستان تھا،ہمارے فیصلوں میں کہیں کوئی تضاد نہیں آیا۔

قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس دہری مشکل ہے، ہم نے ایک طرف کورونا اور دوسری طرف بھوک سے بچنا ہے،پاکستان میں کچی آبادیاں، بڑی آبادیاں اور غریب افراد ہیں، نیوزی لینڈ کی مثال نہیں دی جاسکتی کیونکہ وہاں آبادی پھیلی ہوئی ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن سے متعلق مجھ پر بہت زیادہ دباؤ تھا، خود میری کابینہ کا پریشر تھا،آپ اگر سنگاپورکی طرح ہوتے تو پھر بہترین چیز کرفیو تھی مگر پاکستان کی صورتحال مختلف تھی، ہر ملک اپنے اپنے حساب سے فیصلے کر رہا تھا، اگر دنیا میں کسی ملک کے فیصلوں میں کنفیوژن نہیں تھی تو وہ پاکستان تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ برازیل نے لاک ڈاؤن نہیں کیا وہاں 5 ہزار لوگ مر گئے، مودی نے لاک ڈاون ہمارے بعد کیا، دنیا کا سب سے امیر ملک امریکا بھی مجبوری میں لاک ڈاؤن کھول رہا ہے، ہم نے سب سے پہلے اسمارٹ لاک ڈاؤن کا سلسلہ شروع کیا۔

انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے فیصلے مرکزی سطح پر ہونے چاہیے تھے، ملک میں اگر ہم مکمل لاک ڈاؤن کرتے تو بہت نقصان ہوتا، صوبوں کے ساتھ مکمل کوآرڈینیشن تھی، ہرروز میٹنگ کے ذریعہ ڈیٹا اکٹھا کیا گیا،اس دوران ہمارے فیصلوں میں کہیں کوئی تضاد نہیں آیا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اگلا مرحلہ بڑا مشکل ہے،ہمیں ضابطہ کار ( ایس اوپیز)کی پیروی کرنا ہوگی،احتیاط نہ کی گئی تو ہمارے ہیلتھ سیکٹر پر پریشر مزید بڑھے گا،ہمیں اپنے بوڑھوں اور بیماروں کو بچانا ہے، اگر بے احتیاطی کی گئی تو ہم بہت مشکل میں پڑ جائیں گے،ٹائیگرفورس کو ایس او پیز پر عملدرآمد کروانے پر لگادیا ہے۔

90 فیصد کیسز پرانے ہیں پھر بھی نیب نیازی گٹھ جوڑ کہا جاتا ہے، عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے اپوزیشن پر وار کرتے ہوئے کہا کہ قومی احتساب بیورو (نیب) انھوں نے نہیں بنایا، 90 فیصد کیس پرانے ہیں پھر بھی کہا جاتا ہے کہ نیب نیازی گٹھ جوڑ ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ  کسی پر کیس ہو تو کہتے ہیں سیاسی انتقام ہے،، اگر ‘یہ‘ جواب نہیں دینا چاہتے ہیں تو دیگر کیوں جواب دیں گے؟

وزیراعظم نے کہا کہ  اُن کی کسی سے ذاتی لڑائی یا دشمنی نہیں، نہ ہی وہ اپوزیشن سے کوئی بدلہ لینا چاہتے ہیں۔

وزیراعظم نے تعلیم کے فروغ کےلیے بڑا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ مارچ 2021 تک پورے پاکستان میں یکساں نصاب نافذ ہوجائے گا۔

نئی نئی حکومت تھی ، دباؤ میں آکر شوگر ملز کو ریبیٹ دے دی، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے قومی اسمبلی سے خطاب میں یہ بھی کہا کہ اُن کی نئی نئی حکومت تھی، دباؤ میں آکر شوگر ملز کو ریبیٹ دے دی۔

وزیراعظم نے کہا کہ شوگرملزنے ریبیٹ بھی لیا اورسیلزٹیکس بھی بچایا، 29 ارب روپے کی سبسڈی لی، ٹیکس صرف 9 ارب روپے کا دیا۔

‘ٹڈی دل پاکستان کے لیے خطرناک ہو سکتا ہے’

ٹڈی دل کے حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ 31جنوری سے ٹڈی دل پر ایمرجنسی لگا رکھی ہے، نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) کو ٹڈی دل پر خرچ کا مکمل اختیار ہے، ٹڈی دل پاکستان کے لیے خطرناک ہو سکتا ہے، ٹڈی سے متعلق کئی چیزیں ہمارے ہاتھ میں نہیں، پوری قوم مل کر ٹڈی دل کا مقابلہ کرے گی۔

معیشت کے حوالے سے اظہار خیال کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ہمیں 20 ارب ڈالر کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ملا، جب ہم آئے تو منہگائی عروج پر تھی،اس سے ملک میں غربت میں بھی اضافہ ہوا، زر مبادلہ کے ذخائر 20 ارب سے کم ہو کر 10ارب ڈالر تک آگئے تھے اور ہمارے پاس ذمہ داریاں نبھانے کو پیسے نہ تھے۔

‘اسٹیٹ بینک کا 6 ہزار ارب روپے قرض ختم کردیا’

ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم دیوالیہ ہونے کے قریب تھے، یہ ہماری وجہ سے نہیں تھا بلکہ اس ملک کی سابقہ قیادت کی وجہ سے تھا،6 ہزار ارب سے آپ 30 ہزار ارب پر قرض چھوڑ کر چلے گئے،اسٹیٹ بینک سے 6 ہزار ارب روپے قرض تھا ہم نے اس کو ختم کردیا۔

وزیراعظم کاکہنا تھاکہ گیس، بجلی اور دیگر معاہدے ہم نہیں ہم سے پہلے حکومتیں کرکے گئیں، ہمیں بڑے بوجھ کا سامنا کرنا پڑا، پرائمری قرض ختم ہوچکا ہے کیونکہ ہم نے کفایت شعاری اپنائی ،زرمبادلہ کے ذخائر میں تین فیصد اضافہ ہوا، ہماری ریٹنگ بی تھری میں چلی گئی،اب تک ہم 5 ہزار ارب روپے قرض واپس کرچکے ہیں جو پچھلی حکومتوں نے لیے تھے۔

‘وزیراعظم ملک کے باپ کی طرح ہوتاہے اور قوم اس کے بچے’

ان کا کہنا تھا کہ  وزیر اعظم ملک کے باپ کی طرح ہوتاہے اور قوم اس کے بچے ہوتے ہیں، اگر میرے بچے بھوکے ہیں علاج نہیں کرا سکتا تو کیا بادشاہ کی طرح رہوں گا؟کیا میں اپنے خرچ کم نہیں کروں گا؟میں نے وزیراعظم کے اسٹاف میں سے 534 افراد میں سے آدھے کردیے، ہم اسٹاف مزید کم کرسکتے ہیں مگر کسی کو بے روزگار بھی نہیں کرنا چاہتے،پاک فوج نے بھی دوسری بار اپنے خرچے کم کیے ہیں۔

بجٹ کے حوالے سے وزیراعظم نے بتایا کہ تعمیرات کی صنعت میں آسانیاں پیداکرنے کے لیے 30ارب روپیہ رکھاہے،کھاد کی قیمتوں پر رعایت دی ہے،زراعت کے لیے 50ارب رکھے ہیں،زراعت کے لیے چین کی ٹیکنالوجی ا ستعمال کی جائے گی،غیر ترقیاتی اخراجات میں کمی کی ،ترقیاتی پروگرام میں کٹوتی نہیں کی،جو گھر خرید نہیں سکتے انہیں آسان شرائط پر قرضے مل سکیں گے۔

‘جواب ان سے مانگا جائے جو ایسے حالات پیدا کرکے گئے’

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پہلے 3برسوں میں 17فیصد ٹیکس اکھٹا کیا،ہم نے اسٹیٹ بینک سے کوئی قرضہ نہیں لیا،جواب ان سے مانگا جائے جو ایسے حالات پیدا کرکے گئے،کہتے یوں ہیں جیسے ہمیں سوئٹزرلینڈ کی معیشت ملی تھی۔

تعلیم کے حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ وزیر تعلیم شفقت محمود کو خراج تحسین پیش کرتاہوں،شفقت محمود نے تعلیم کے شعبے میں  اہم کام کیے جو پہلےکبھی کسی نے نہیں کیے،دینی مدارس کو قومی دھارے میں لایا جا رہاہے۔

‘دہشتگردی کیخلاف جنگ میں امریکا کاساتھ دیکرپاکستان کو ذلت اٹھانی پڑی’

خارجہ پالیسی پر اظہار خیال کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ حکومت کی سب سے بڑی کامیابی خارجہ پالیسی میں ہے،دہشت گردی کے خلاف جنگ میں امریکا کاساتھ دے کرپاکستان کو ذلت اٹھانی پڑی،افغانستان میں امریکا کامیاب نہیں ہوا تو ذمہ داری بھی پاکستان پر ڈالی،ایڈمرل ملن نے کہا تھاکہ پاکستان کی اجازت سے ڈرون حملے کر رہے ہیں،حکومت پاکستان اپنے لوگوں سے جھوٹ کیوں بولتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم امن میں شرکت کریں گے جنگ میں شرکت نہیں کریں گے،سخت مؤقف رکھنےوالاسینیٹرلنزے گراہم پی ٹی آئی کے مؤقف کی توثیق کرتا ہےکہ مسئلے کاحل فوجی نہیں، آج ڈونلڈٹرمپ پاکستان سےدرخواست کرتا ہےکہ افغانستان میں امن کے لیے مددکی جائے،افغانستان میں امن مذاکرات میں پاکستان کا بہت بڑا ہاتھ ہے۔

‘پاکستان کی تاریخ میں شرمساری کے دو واقعات ہوئے’

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ‘پاکستان کی تاریخ میں شرمساری کے دو واقعات ہوئے ،امریکا نے ایبٹ آباد میں آکر اسامہ بن لادن کو شہید کردیا،اس  واقعے کی وجہ سے دنیا بھر میں لعن طعن ہوئی،دوسری شرمندگی پاکستان میں ڈرون حملے تھے،ہمارا اتحادی پاکستان میں اسامہ کو مارتا بھی ہے اور ہم پرتنقید بھی کرتاہے’۔

سعودی عرب کے حوالے سے وزیراعظم نے کہا کہ سعودی عرب سے پاکستان کے زبردست تعلقات ہیں جب کہ ایران ہماراہمسایہ ہے، ایران اور سعودیہ نے ہم سےکہادونوں کہ  کےتعلقات میں بہتر ی کے لیے پاکستان کوشش کرے،کچھ لوگ سعودی عرب اور ایران میں تنازع چاہتے ہیں۔

بھارت کے حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ نیویارک گیا تو اقوام متحدہ میں راشٹریہ سویم سیوک سنگھ( آر ایس ایس) کا معاملہ اٹھایا،اقوام متحدہ میں بھارتی چہرہ بے نقاب کیا،پاکستان کی وجہ سے دنیا نے مقبوضہ کشمیر کی صحیح صورتحال کو دیکھا،میرے خیال میں کشمیر کامعاملہ پوائنٹ آف نوریٹرن پر پہنچ گیا ہے۔

‘مودی سرکار کی آئیڈیالوجی سے بھارتی قوم بھی پریشان ہے’

ان کا کہنا تھا کہ مودی سرکار کی آئیڈیالوجی سے بھارتی قوم بھی پریشان ہے،بھارت کی انتہاپسندحکومت اور تھنک ٹینکس کامقصد ہے پاکستان کوسبق سکھایاجائے جب کہ مودی حکومت کو خود بھارتی بھی عذاب سمجھتے ہیں۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہمیں پاکستان کی ریاست کو ریاست مدینہ کے اصولوں پر کھڑا کرنا ہے، حادثہ ہویا کورونا تو کہاجاتا ہے کدھر ہے مدینہ کی ریاست،چین نے 70 کروڑ افرادکو غربت سےنکالا ،ہم احساس پروگرام سےغریب طبقےکواٹھائیں گے،چین کے تجربے سے جو سیکھ سکتے ہیں وہ کسی اور سے نہیں سیکھ سکتے۔

احستاب کے حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جب کسی پر کیس ہوتاہے تو کہتے ہیں سیاسی انتقام ہے،احتساب کا عمل آگے نہیں بڑھا تو تعلیم اور صحت کے لیے پیسہ اکھٹا نہیں کرسکتے۔

وزیر ریلوے شیخ رشید نے کورونا کوشکست دے دی، ٹیسٹ نیگٹیو آگیا

راولپنڈی: (ویب ڈیسک) وزیر ریلوے شیخ رشید نے کورونا کوشکست دے دی، شیخ رشید کا کورونا وائرس ٹیسٹ نیگٹیو آگیا۔وزیر ریلوے جلد ہی گھرشفٹ ہو جائیں گے۔ شیخ رشید کورونا کے باعث ملٹری ہسپتال میں زیرعلاج تھے۔ ان کا کہنا ہے کہ اللہ تعالی نے کرم کیا ہے، عوام کی دعاو¿ں کی بدولت شفا ملی ہے، وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف کا شکریہ کہ وہ میری صحت کیلئے فکرمند رہے، دعاوں میں یاد رکھنے والے تمام احباب کا شکر گزار ہوں۔خیال رہے پاکستان میں کورونا کے متاثرین تیزی سے بڑھنے لگے، ملک بھر میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد ایک لاکھ 92 ہزار 970 تک پہنچ گئی جبکہ ایک دن میں 148 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد اموات کی تعداد 3 ہزار 903 ہوگئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 4 ہزار 44 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، پنجاب میں 71 ہزار 191، سندھ میں 74 ہزار 70، خیبر پختونخوا میں 23 ہزار 887، بلوچستان میں 9 ہزار 817، گلگت بلتستان میں ایک ہزار 365، اسلام آباد میں 11 ہزار 710 جبکہ آزاد کشمیر میں 930 کیسز رپورٹ ہوئے۔ملک بھر میں اب تک 11 لاکھ 71 ہزار 976 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 21 ہزار 835 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 81 ہزار 307 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 3 ہزار 3 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔پاکستان میں کورونا سے ایک دن میں 148 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 3 ہزار 903 ہوگئی۔ پنجاب میں ایک ہزار 602، سندھ میں ایک ہزار 161، خیبر پختونخوا میں 869، اسلام آباد میں 115، گلگت بلتستان میں 23، بلوچستان میں 108 اور ا?زاد کشمیر میں 25 مریض جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

وزراءکو ایک دوسرے کیخلاف بیان بازی بند کرنے کا حکم، ملکر ملک کی خدمت کریں، وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد ( ملک منظور احمد ) وزیر اعظم عمران خان کی مدا خلت پر وفاقی وزراءفواد چوہدری اور اسد عمر کے درمیان پائے جانے والے اختلافات ختم ہو گئے ہیں ۔وزیر اعظم کے احکامات پر دونوں وزراءکے درمیان گزشتہ روز مذاکرات ہوئے ہیں جس میں دونوں اطراف سے شکایات اور تحفظات کا تبادلہ کیا گیا ہے ۔طویل دورانیے کی اس ملا قات میں اسد عمر نے فواد چوہدری سے شکا یت کی کہ بہتر ہوتا کہ آپ میڈیا میں پارٹی کی اندرونی باتیں اجاگر کرنے سے پہلے مجھ سے رابطہ کرلیتے ۔کابینہ کے دونوں ارکان کے درمیان طویل مشاور ت کے بعد غلط فہمیاں دور ہو گئیں ہیں ۔دونوں وزراءنے وزیر اعظم کی قیادت پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعظم کی قیادت میں ہم متحد ہیں ۔وزیر اعظم ہمارے کپتان ہیں وہ جو فیصلہ کریں گے اس کی پا سداری ہم پر لازم ہے ۔اسد عمر نے کہا کہ میں یہ بات نہیں مانتا کہ مجھے جہا نگیر ترین نے کا بینہ سے نکلو ایا تھا ،تمام فیصلے وزیر اعظم کرتے ہیں ۔وزیر اعظم نے اعلیٰ سطح مشاورتی اجلاس میں تمام رہنما ﺅ ں اور کا بینہ کے ارکان کو ہدایت کی ہے کہ پارٹی ڈسپلن کی ہر گز خلاف ورزی نہ کی جائے آئندہ جو پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی کرے گا اس کے خلا ف سخت کا روائی عمل میں لا ئی جائے گی ۔اسد عمر نے واضح کیا میرا کسی گروپ سے کوئی تعلق نہیں ہے ،میں وزیر اعظم کی ٹیم کا حصہ ہوں اور عمران خان ہی ہما رے ٹیم لیڈر ہیں ۔

’پائلٹس کے ذہنوں پر کورونا سوار تھا‘، کراچی طیارہ حادثے کی رپورٹ اسمبلی میں پیش،

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرور خان نے کراچی پی آئی اے طیارہ حادثے کی عبوری تحقیقاتی رپورٹ قومی اسمبلی میں پیش کردی۔قومی اسمبلی میں رپورٹ پیش کرتے ہوئے غلام سرور خان نے کہا کہ حادثے کے دن ہی انکوائری کمیشن تشکیل دے دیا تھا جب کہ طیارہ حادثے کے 3 روز بعد فرانسیسی تفتیشی ٹیم پاکستان آ ئی اور جائے حادثہ کا دورہ کیا۔ وزیر ہوا بازی نے کہا کہ صاف شفاف انکوائری ہورہی ہے، انکوائری میں سینئر پائلٹس کو بھی شامل کیا گیا تاہم حادثے کی مکمل رپورٹ تیار ہونے میں ایک سال کا وقت لگے گا۔انہوں نے بتایا کہ ابتدائی رپورٹ کے مطابق طیارہ پرواز کے لیے 100 فیصد فٹ تھا، پائلٹس بھی طبی طور پر جہاز اڑانے کے لیے فٹ تھے جب کہ پائلٹس نے دوران پرواز کسی قسم کی تکنیکی خرابی کی نشاندہی نہیں کی۔غلام سرورخان نے مزید بتایا کہ ائیر ٹریفک کنٹرولر نے 3 بار پائلٹس کی توجہ مبذول کروائی کہ لینڈنگ نہ کریں ایک چکر اورلگائیں لیکن پائلٹس نے ائیر ٹریفک کنٹرول کی ہدایات کو نظر انداز کیا، رن وے سے 10 میل کے فاصلے پر جہاز کو 2500 فٹ پر اڑنا چاہیے تھا، اس وقت جہاز 7220 فٹ کی بلندی پر تھا اور یہ پہلی خلاف ورزی تھی، کنٹرولر نے تین بار پائلٹ کو بتایا اور لینڈنگ نہ کرنے کو کہا، جہاز کے لینڈنگ گیئر 10 ناٹیکل مائلز پر کھولے گئے، 5 ناٹیکل مائلز پر پہنچنے کے بعد لینڈنگ گیئر پھر اوپر کر لیے گئے۔وفاقی وزیر نے رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ رن وے پر 1500 سے 3 ہزار فٹ پر جہاز رن وے کو ٹچ کر سکتا ہے ، جہاز رن وے پر انجن رگڑنے سے متاثر ہوا اور آگ نکلی، پائلٹ نے پھر ہدایات کو نظر انداز کر کے جہاز اڑا لیا، کنٹرولر کی بھی غلطی تھی اسے پائلٹ کو بتانا چاہیے تھا، جہاز جب اوپر اٹھایا تو دونوں انجنز متاثر ہو چکے تھے، دوبارہ اس نے لینڈنگ کی اجازت مانگی، جو اسے اپروچ دی گئی وہ بد قسمتی سے وہاں نہ پہنچ سکا اور سویلین آبادی میں گر گیا، پائلٹ اور کنٹرولر دونوں نے مروجہ طریقہ کار کو اختیار نہیں کیا، آخری الفاظ پائلٹ نے تین بار یا اللہ ادا کیے۔غلام سرور خان کا کہنا تھا کہ پائلٹ اور کو پائلٹ کے ذہنوں پر کورونا سوار تھا، ساری گفتگو کورونا پر کر رہے تھے، کنٹرولر کی کال بھی جلدی میں سن کے کہا گیا میں مینیج کر لوں گا، زیادہ خود اعتمادی دیکھنے کو ملی، پائلٹ نے جہاز کو آٹو کنٹرول سے مینوئل پر منتقل کیا۔وفاقی وزیر نے کہا کہ طیارہ گرنے سے 29 گھروں کو نقصان پہنچا ہے جن گھروں پر طیارہ گرا ان کا سروے کروادیا ہے جب کہ گھروں کے نقصانات کا بھی سروے کرایا گیا ہے، جن گھروں کو نقصان پہنچا ہے ان کا ازالہ بھی جلد کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کی ذاتی دلچسپی اور کورونا کی صورتحال کے باوجود انکوائری بورڈ نےفرائض منصبی انجام دیے، ایک عوامی رائے سامنے آئی کہ پائلٹس کو بھی انکوائری کمیٹی کا حصہ بنایا جائے جس پر 2 پائلٹس کوکمیٹی کا حصہ بنایا، مکمل انکوائری رپورٹ میں تمام ترمعاوضہ جات، محرکات اور حقائق سامنے لائیں گے، مکمل رپورٹ بھی اس ایوان کی سامنے پیش کی جائے گی۔غلام سرور نے کہا کہ بد قسمتی سے پی آئی اے کے 4 پائلٹس کی ڈگریاں جعلی نکلیں، بدقسمتی سے پائلٹس کو بھرتی کرتے وقت میرٹ کو نظر انداز کیا گیا، پائلٹس کو بھی سیاسی بنیادوں پر بھرتی کروایا جاتا ہے، جودکھ کی بات ہے۔ان کا کہنا تھا کہ عدالت کو بھی ہم تمام حقائق سے متعلق آ گاہ کررہے ہیں اور ذمے داروں کے خلاف بلا تفریق ایکشن ہوگا۔