All posts by Faisal Khan

لاہور کے داخلی و خارجی راستے کنٹینر لگا کر بند!

مذہبی جماعت کے لاہور سے اسلام آباد مارچ و متوقع احتجاج سے نمٹنے کے لیے راولپنڈی میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی جب کہ مری روڈ سمیت اہم شاہراہوں کو کنٹرینرز اور رکاوٹیں کھڑی کرکے بند کر دیا گیا ہے۔جمعے کی نماز کے بعد لاہور سے اسلام آباد کی جانب مارچ کی کال دئیے جانے کے بعد سے جڑواں شہروں راولپنڈی اور اسلام آباد میں سیکیورٹی کو ہائی الرٹ کر دیا گیا ہے۔

اسلام آباد جانے والے راستوں کو کنٹینرز اور خاردار تاروں کے ذریعے سیل کر دیاگیا ہے۔علاوہ ازیں لاہور کے داخلی و خارجی راستے بھی کنٹینر لگا کر بند کر دئے گئے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق لاہور کے داخلی و خارجی راستوں پر پولیس کی بھاری نفری تعینات کر دی گئی ہے۔

اسلام آباد اور راولپنڈی کی مختلف سڑکیں بند ہونے کی وجہ سے مسافروں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے تاہم ٹریفک پولیس نے مسافروں کو متبادل راستوں سے متعلق اہم ہدایات جاری کر دی ہیں۔

کورونا سے ایک لاکھ 80 ہزار ہیلتھ ورکرز ہلاک ہوئے: عالمی ادارہ صحت

دنیا بھر میں عالمی وبا کورونا سے ایک لاکھ 80 ہزار ہیلتھ ورکرز ہلاک ہوئے۔
عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او ) کے مطابق ہیلتھ ورکرز کو ویکسین کی فراہمی اولین ترجیح ہونی چاہیے۔عالمی ادارہ صحت کاکہنا ہے کہ دنیا بھر میں اوسطاً ہر 5 میں سے 2 ہیلتھ ورکرز ویکسین کی مکمل خوراک لے چکے ہیں، ویکسین تک رسائی سمیت ہیلتھ ورکرزکےحقوق کویقینی بنائیں گے۔
عالمی ادارہ صحت کے مطابق عالمی وبا آنے کے بعد اب تک کورونا سے ایک لاکھ 80 ہزار ہیلتھ ورکر انتقال کرچکے ہیں

پاکستان ملٹری اکیڈمی کاکول میں مختلف کورسز کی پاسنگ آؤٹ پریڈ

پاکستان ملٹری اکیڈمی (پی ایم اے)کاکول میں مختلف کورسز کی پاسنگ آؤٹ پریڈ  ہوئی ، پاس آؤٹ ہونے والوں میں آذربائیجان، بحرین، عراق، سعودی عرب اور سری لنکا کے کیڈٹس بھی شامل تھے۔

انٹرسروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے مطابق پی ایم اے کاکول اکیڈمی میں 144 ویں لانگ کورس اور دیگر کورسز کی پاسنگ آؤٹ پریڈ کا انعقادکیا گیا۔

 مہمان خصوصی سعودی رائل ائیر فورسز کے چیف آف جنرل اسٹاف جنرل فائد بن حامد نے پریڈ کا معائنہ کیا ، مہمان خصوصی جنرل فائد بن حامد نے کیڈٹس میں اعزازت بھی تقسیم کیے۔

بٹالین سینیئر انڈر آفیسر عثمان انور کو اعزازی شمشیر سے نوازا گیا، بٹالین سینئر انڈر آفیسر حمزہ نذیر نے صدارتی گولڈ میڈل حاصل کیا۔

سری لنکا کے سینیئر انڈر آفیسر وناسینگل کو چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی اوورسیز گولڈ میڈل سے نوازاگیا، کمانڈنٹ میڈل سعودی عرب کے جونیئر انڈر آفیسر رافد عبداللہ کو ملا ، کورس انڈر آفیسرز وقار محمد اور حسن ابرار کو چیف آف آرمی اسٹاف کین سے نوازا گیا، کورس انڈر آفیسرز حنا بخاری اور حور فاطمہ کو کمانڈنٹ کین سے نوازا گیا۔

سعودی افواج کے چیف آف جنرل اسٹاف نے پاک فوج کی پیشہ وارانہ مہارتوں کو سراہا، انہوں نے پاس آؤٹ ہونے والے کیڈٹس کو مبارک بھی دی۔

وزیراعظم کا عوام کی جزوی طور پر حل شدہ شکایات دوبارہ کھولنے کا حکم

وزیر اعظم عمران خان نے شہریوں کی شکایات کے ٹھوس ازالے کے لیے 2 ہزار 549 اداروں کی جزوی طور پر حل شدہ شکایات کو دوبارہ کھولنے کا حکم دے دیا۔

یاد رہے کہ سال 2018 میں اقتدار سنبھالنے کے 2 ماہ بعد اکتوبر میں وزیرِ اعظم عمران خان نے عوام کی شکایت آن لائن درج کروانے کے لیے پاکستان سٹیزن پورٹل کا افتتاح کیا تھا۔

ایپلیکیشن کے اجرا کے پہلے ایک سال میں اس پورٹل کے ذریع مختلف محکموں اور اداروں کے خلاف عوام کی 5 لاکھ شکایتیں حل کی گئی تھیں۔

تاہم اب عوام کی جانب سے سیٹزن پورٹل پر کی گئیں متعدد شکایات حل کیے بغیر جزوی ریلیف کا عندیہ دے کر بند کیے جانے کی شکایات سامنے آرہی تھیں۔

پرائم منسٹر ڈیلیوری یونٹ (پی ایم ڈی یو) کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم کے حکم کے تحت 83 ہزار741 شکایات دوبارہ کھول کر مجاز افسران کوضروری کارروائی کے لیے تفویض کی جائیں گی۔

سرکاری خبررساں ادارے اے پی پی کی رپورٹ کے مطابق مذکورہ تمام شکایات میں شہریوں کو جزوی ریلیف کا عندیہ دیا گیا تھا۔

پی ایم ڈی یو نے کہا ہے کہ 773 وفاقی اداروں کی 43 ہزار 351 شکایات کھولی جا ئیں گی جبکہ صوبائی حکومتوں کے 2 ہزار 450 اداروں کی 40 ہزار 415 شکایات دوبارہ تفویض کی جائیں گی۔

پی ایم ڈی یو نے مزید بتایا کہ کہ وفاقی سطح پر سب سے زیادہ 3 ہزار 181 شکایات آئیسکو کی کھولی جائیں گی۔

صوبائی سطح پر پنجاب میں ہائی ویز کی ایک ہزار 606، خیبرپختونخواہ میں پی ڈی اے کی 412 ، سندھ میں کے ڈبلیو ایس پی کی 874 اور بلوچستان میں سیکنڈری ایجوکیشن کی 130شکایات سر فہرست ہیں۔

پی ایم ڈی یو نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کی ہدایات کی روشنی میں عوامی شکایات کا ہر ممکن حل یقینی بنایا جائے گا۔

ملک میں فوری شفاف انتخابات کروائے جائیں، شہباز شریف اور فضل الرحمان کا مطالبہ

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) اور جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے مسلم لیگ (ن) کے صدر و قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف سے ملاقات کی۔

مولانا فضل الرحمان لاہور میں شہباز شریف کے گھر پہنچے جہاں انہوں نے شہباز شریف کی عیادت کی۔

دونوں رہنماؤں کی ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال پر گفتگو کی گئی۔

بعدازاں میڈیا سے گفتگو میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے ملک میں شفاف انتخابات کرانے کا مطالبہ کیا۔

ان کا کہنا تھاکہ ملک میں کمر توڑ مہنگائی ہے، آٹا اور چینی کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں، مہنگائی کے خلاف ہرصورت مارچ کرنا ہوگا۔

ان کا کہنا تھاکہ ڈینگی نے تباہی مچائی ہوئی ہے، اسپتالوں میں بستر نہیں مل رہے لیکن  حکومت غفلت کی نیند سورہی ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہناتھا کہ پی ڈی ایم اپنے اہداف کے حصول کیلئے سنجیدہ اور متحرک ہے، ہمیں مل کرآگے بڑھنا ہے۔

مولانا فضل الرحمان نے ایک بار پھر جلسے کرنے کا اعلان کیا۔

فرانس میں زیرِتعمیر یورپ کی سب سے بڑی مسجد کو شہید کرنے کی دھمکی

فرانس میں زیر تعمیر یورپ کی سب سے بڑی مسجد کی انتظامیہ کو ایک خط موصول ہوا ہے جس میں مسجد پر حملے اور شہید کرنے کی ناپاک دھمکی دی گئی ہے۔
عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق فرانس کے شہر اسٹراسبرگ میں ترکی جانب سے تعمیر کی جانے والی یورپ کی سب سے بڑی مسجد ’’آئپ سلطان مسجد‘‘ کو اعلان جنگ کے عنوان سے دھمکی آمیز خط موصول ہوا ہے۔
خط میں مسجد کی تعمیر کرنے والی اسلامی تنظیم کی چیئرپرسن کو قتل اور زیر تعمیر مسجد پر بمباری کی دھمکی دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اچھی طرح سے تیاری کرو، بدلہ شروع ہوتا ہے۔ ہم مساجد کے خلاف ہیں اور انھیں بڑے حملوں سے نشانہ بنائیں گے۔
گمنام خط میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ فرانس میں اسلام کے لیے کوئی جگہ نہیں اور ملک میں رہائش پزیر مسلمانوں کو اپنے مذہب یا فرانس میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا ہوگا اور ہمیں یقین ہے اکثریت اسلام کا انتخاب کرے گی۔ پھر کیوں آپ لوگ فرانس میں رہ رہے ہیں؟
واضح رہے کہ فرانس میں زیر تعمیر سلطان مسجد سال کے آخر تک مکمل ہوجائے گی۔ مسجد کے اندرونی حصے کی گنجائش ڈھائی ہزار افراد کی ہے جب کہ بیرونی حصے میں مزید ڈھائی ہزار نمازی عبادت کرسکتے ہیں اس کے علاوہ مسجد کے احاطے میں میوزیم، لائبریری اور ریسٹورینٹ بھی ہوں گے۔

احتساب آرڈيننس پارلیمنٹ پر عدم اعتماد اور عدلیہ پر حملہ ہے، شہباز شریف

مسلم لیگ (ن) کے صدر و قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے قومی احتساب آرڈیننس کو پارلیمنٹ پر عدم اعتماد اور عدلیہ پر حملہ قرار دے دیا۔

اپنے بیان میں شہباز شریف کا کہنا تھاکہ آرڈیننس کے ذریعے بڑی قانونی ترامیم پارلیمنٹ پر عدم اعتماد اور غیر آئینی و غیر جمہوری رویہ ہے۔

ان کا کہنا تھاکہ یہ پارلیمنٹ ہی نہیں عدلیہ پر بھی حملہ ہے، حکومت نے خود کو بچا کر اداروں کی آئینی آزادی چھیننے کا قدم اٹھایا ہے۔

شہباز شریف کا کہنا تھاکہ نیب کے پہلے سے متنازعہ قانون میں آرڈیننس کے ذریعے 18 بڑی ترامیم حکومت کا جوابدہی سے فرار ہے اور یہ سیاہ آرڈیننس ملک میں رہی سہی جمہوریت کا گلا گھونٹ کر شخصی حکمرانی قائم کرنے کی طرف قدم ہے۔

ان کا کہنا تھاکہ متحدہ اپوزیشن آئین میں اداروں کے متعین اختیارات حکومت کو چھننے نہیں دے گی اور تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے حکومتی اقدامات روکیں گے۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے قومی احتساب دوسرا ترمیمی آرڈیننس 2021 جاری کیا تھا جس کے تحت جسٹس (ر)جاوید اقبال کو نئے چیئرمین نیب کی تعیناتی تک توسیع دے دی گئی ہے۔

سارہ اور فلک کے ہاں ننھے مہمان کی آمد

پاکستان کی مقبول  اداکارہ سارہ خان  اور گلوکار فلک شبیر کے ہاں بیٹی کی پیدائش ہوئی ہے۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم انسٹاگرام پر گلوکار فلک شبیر کی جانب سے اپنے اور سارہ خان کے ہاتھ کے ہمراہ بچی کے ہاتھ کی تصویر شیئر کرتے ہوئے مداحوں کو والدین بننے سے متعلق خوشخبری دی گئی۔

فلک شبیر نے اپنی پوسٹ میں مداحوں کو ربیع الاول کے چاند کی مبارکباد دی اور لکھا کہ ’ا اس بابرکت مہینے کے بابرکت دن کے موقع پر اللّہ تعالیٰ نے ہمیں اپنی رحمت سے نوازا ہے۔‘

فلک شبیر نے اپنی پوسٹ میں بیٹی کی پیدائش  پر محسوس کی جانے والی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے مداحوں کو بیٹی کی محبت سے بھی آگاہ کیا۔

فلک شبیر نے اس خوبصورت موقع پر اللہ کا شکر اداکرتے ہوئے بیٹی کے نام سے متعلق بھی مداحوں کو آگاہ کیا اور بتایا کہ اُنہوں نے اپنی بیٹی کا نام ’عالیانہ فلک‘ رکھا ہے۔

گلوکار نے  پوسٹ کے کیپشن میں  مداحوں کی جانب سے ملنے والی دُعاؤں اور محبت کے لیے اُن کا بھی شکریہ ادا کیا۔

خیال رہے کہ رواں برس جون میں سارہ خان نے اپنے ہاں ننھے مہمان کی جلد آمد متوقع ہونے کی خوشخبری سُنائی تھی۔

افغانستان میں نماز جمعہ کے دوران مسجد میں دھماکا، 50 افراد جاں بحق

افغانستان کے شہر قندوز میں نماز جمعہ کے دوران زوردار دھماکا ہوا ہے جس کے نتیجے میں 50 سے زائد افراد جاں بحق اور 200 سے زائد زخمی ہوگئے۔
عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان کے شہر قندوز میں ایک مسجد میں اس وقت زوردار دھماکا ہوا ہے جب وہاں نماز جمعہ کی ادائیگی کی جارہی تھی۔
ترجمان طالبان نے دھماکے میں متعدد افراد کے جاں بحق اور زخمی ہونے کا خدشہ ظاہر کیا ہے لیکن مقامی میڈیا کا دعویٰ ہے کہ 50 سے زائد افراد جاں بحق اور 200 سے زائد زخمی ہیں۔
ریسکیو ادارے کے ایمبولینس اور اپنی مدد آپ کے تحت زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے جب کہ طالبان اہلکاروں نے علاقے کا محاصرہ کرلیا ہے اور سرچ آپریشن جاری ہے۔
تاحال دھماکے کی نوعیت کا تعین نہیں کیا جا سکا ہے۔ جس جگہ دھماکا ہوا وہاں زیادہ تر شیعہ آبادی مقیم تھی۔ حملے کی ذمہ داری کسی گروپ نے قبول نہیں کی ہے۔
ترجمان طالبان اور نائب وزیر اطلاعات ذبیح اللہ مجاہد نے ٹوئٹ میں مسجد دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ قندوز کے خان آباد بندرگاہ کے علاقے میں شیعہ مسجد میں دھماکا ہوا ہے جس میں ہمارے متعدد ہم وطن جاں بحق اور زخمی ہوئے۔
واضح رہے کہ طالبان کے افغانستان میں اقتدار سنبھالنے کے بعد سے داعش خراسان نے متعدد بم اور خود کش دھماکوں کی ذمہ داری قبول کی ہے ان میں طالبان کی گاڑی پر حملے بھی شامل ہیں۔

وزیراعظم نے رمیز راجہ کو چیئرمین پی سی بی بنانے کا عندیہ دے دیا

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے رمیز راجہ کو چیئرمین پی سی بی بنانے کا عندیہ دےدیا۔

وزیراعظم عمران خان سے پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی اور سابق کرکٹر و کمنٹیٹر رمیز راجہ نے ملاقات کی جس میں بورڈ کے معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ احسان مانی کو آئندہ تین سال کے لیے توسیع نہ دینے کے فیصلے سے آگاہ کیا جب کہ رمیز راجہ کو بورڈ کا نیا چیئرمین بنانے کا عندیہ بھی دیا۔

ذرائع کاکہناہےکہ وزیراعظم عمران خان رمیز راجہ کا نام بطور ممبر بورڈ آف گورنرز کو بھجوائیں گے۔

امریکا سے افغانستان سے انخلا کی تاریخ میں توسیع کا مطالبہ کریں گے: برطانیہ

برطانیہ کا کہنا ہےکہ امریکی صدر سے افغانستان سے انخلا کی حتمی تاریخ میں توسیع کا مطالبہ کیا جائے گا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق برطانوی وزرا کا کہنا ہےکہ منگل کے روز ہونے والے جی سیون اجلاس کے موقع پر وزیراعظم بورس جانسن امریکی صدر جوبائیڈن سے افغانستان سے انخلا کی حتمی تاریخ میں توسیع کا مطالبہ کریں گے۔

برطانوی وزیر برائے مسلح افواج جیمس ہیپی اور جیمس کلیورلی نے کہا کہ برطانیہ امریکا پر زور دے گا کہ وہ افغانستان سے انخلا کے لیے مقرر 31 اگست کی تاریخ کو آگے بڑھائے جس سے لوگوں کی بڑی تعداد کو طالبان سے بچ نکلنے میں مدد ملے گی۔

وزیر برائے مسلح افواج کا کہنا تھا کہ برطانیہ آنے کے اہل تقریباً 4 ہزار افراد اب بھی افغانستان میں موجود ہیں اور اگر ممکن ہوا تو برطانوی حکومت مزید ہزاروں افراد کا انخلا کرسکتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اصل چیز یہ ہےکہ ہمارے خیال میں ہم سب کو گزشتہ ہفتے سے سیکھنا چاہیے اور ہم ہمیشہ جو ٹائم لائنز بناتے ہیں وہ مکمل طور پر ہمارے کنٹرول میں نہیں ہوتیں، اب ہمیں مزید وقت درکار ہے، ہم مزید لوگوں کا انخلا کرسکتے ہیں جس کے لیے ہم دباؤ ڈال رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بظاہر نظر آیا کہ طالبان تعاون کررہے ہیں لیکن برطانوی طالبان پر انحصار نہیں کرسکتے، اس لیے ہم ترجیحی بنیادوں پر جتنی جلدی ممکن لوگوں کا تیزی سے انخلا کررہے ہیں، اگر اس میں ہمیں مزید وقت ملتا ہے تو یہ بہت اچھا ہوگا۔

واضح رہےکہ برطانوی وزیراعظم جی سیون ممالک کے ورچوئل اجلاس کی میزبانی کریں گے جس میں برطانوی حکومت کی جانب سے طالبان پر مزید پابندیاں عائد کیے جانے کا امکان ہے۔

جج کا قتل دہشتگردی قرار، عدالت نے سزائے موت کیخلاف اپیل مسترد کر دی

لاہور ہائیکورٹ نے ایڈیشنل سیشن جج کے قتل کو دہشتگردی قرار  دیتے ہوئے کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا۔

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس چوہدری عبدالعزیز اور جسٹس علی ضیاء باجوہ پر مشتمل دو رکنی بینچ نے ایڈیشنل سیشن جج کے قتل سے متعلق کیس کا 26 صفحات پر مشتمل تفصیلی فیصلہ جاری کیا۔

عدالت نے ایڈیشنل سیشن جج کے قاتل فیض کی سزائے موت کے خلاف درخواست مسترد کرتے ہوئے کہا کہ جج کا عہدہ بھی عوامی خدمت گزار کی تعریف میں آتا ہے۔

عدالت نے شریک مجرم رشید اور امیر بھٹی کی موت کی سزائیں عمر قید میں تبدیل کر دیں۔

جسٹس علی ضیاء باجوہ نے فیصلے میں لکھا کہ ملزمان کی شناخت پریڈ کسی بھی کیس میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے، پولیس نے ملزموں کی شناخت پریڈ بغیر قانونی سقم اور رولز کے مطابق کروائی۔

عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ مقتول جج کے قریبی رشتہ داروں کی گواہی کو مکمل طور پر رد نہیں کیا جا سکتا، پراسیکیوشن نے کیس میں شواہد اور حالات کی کڑیاں بہترین طریقے سے جوڑیں، مجرموں کے عدالت میں جرم تسلیم کرنے کے بیان نے بھی کیس ثابت کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔

خیال رہے کہ ایڈیشنل سیشن جج طاہر خان نیازی کو اگست 2015 میں ان کے گھر میں فائرنگ کر کے قتل کیا گیا تھا جس کا مقدمہ تھانہ صادق آباد پولیس نے مقتول جج طاہر خان نیازی کے بھائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا تھا۔

انسداد دہشتگردی کی عدالت نے 2016 میں مجرم فیض، امیر بھٹی اور رشید کو 2، 2 بار موت کی سزائیں سنائی تھی جس کے خلاف انہوں نے لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کیا تھا۔