تازہ تر ین

آسٹریلوی ہائی کمشنر کاپاکستان میں امن کی صورتحال بارے اہم بیان

اسلام آباد ( انٹروےو : ملک منظور احمد ،تصاوےر :فتح علی) پاکستان مےں تعےنات آسٹرےلےا کی ہائی کمشنر مارگرےٹ اےڈمسن نے کہا ہے کہ پاکستان مےں لاءاےنڈآرڈر اور سکےورٹی کے اقدامات سے ملک مےں امن و امان مےں بہتری آئی ہے اس کے لئے سےاسی و عسکری قےادت کی کاوشےں قابل ستائش ہےں ۔ چےن پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے سے پورا خطے کو فائدہ ہوگا اور آسٹرےلےا اس منصوبے کی حماےت کرتا ہے ۔ پاکستان اور آسٹرےلےا کے مابےن مضبوط اور درےنہ تعلقات ہےں جن مےں وقت کے گزرنے کے ساتھ ساتھ مذےد بہتری آرہی ہے ۔ دونوں ممالک کے مابےن دو طرفہ تجارت کے فروغ کے وسےع تر امکانات موجود ہےں جس پر پاکستان حکومت کے ساتھ ملکر کام کرہے ہےں ۔آسٹرےلےا پاکستان مےں زراعت و لائےو سٹاک ، تعلےم کے فروغ اور آبی وسائل کی بہتری کےلئے ہر ممکن مدد فراہم کررہا ہے اس سے پاکستان کی معےشت کو استحکام ملے گا۔ ان خےالات کا اظہار انہوں نے چےنل فائےو کے پروگرام ڈپلومےٹک انکلےو کو خصوصی انٹروےو دےتے ہوئے کےا ۔ آسٹرےلےا کی ہائی کمشنر مارگرےٹ اےڈمسن نے کہا ہے کہ اسٹرےلےا اور پاکستان کے درمےان تعلقات بہت دےرےنہ ہےں اور وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ان مےں مذےد بہتری آئی ہے اور ہمےں مستقبل مےں بھی اپنے تعلقات کو مضبوط بنانا ہے ۔ آسٹرےلےا ان چند ممالک مےں ہے جنہوں نے پاکستان کو قےام کے فوری بعد تسلےم کےا اور اسٹرےلےا نے 1948 مےں اپنا ہائی کمےشن کراچی مےں قائم کےا ۔ دونوں ممالک مےں بہتر تعلقات کئی دھائےوں مےں محےط مراسم ہےںاور ہم مشترکہ ورثہ اشتراک کے ساتھ ہےں دونوں ممالک کے درمےان تعلقات وقت کے ساتھ ساتھ درپےش چےلنجز سے اور مضبوط ہوئے ہےں ۔ ہم پاکستان کی سالمےت کے ساتھ کھڑے ہےں اور پاکستان کو درپےش چےلنجز کے دوران پاکستان کی ہر ممکن مدد کی ہے اور مذےد کام کرنے کی ضرورت ہے تاکہ دونوں ممالک کے عوام اےک دوسرے کے قرےب آسکےں پاکستان کے عوام ملن نثار اور مہمان نواز ہےں اور اہم بات یہ ہے کہ یہاں کے لوگ اپنے ملک کی ترقی کےلئے سنجےدہ ہےں ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور اسٹرےلےا کے مابےن تجارت کے وسےع مواقع موجود ہےں جب مےں پاکستان آئی تو دونوں ممالک کے درمےان تجارتی حجم 0.6 بلےن ڈالر تھا لےکن مجھے فخر ہے کہ اب یہ حجم اےک بلےن ڈالر ہوچکا ہے ۔ تجارت کے فروغ کےلئے درست سمت کا تعےن ضروری ہوتا ہے اور دونوں ممالک کے مابےن تھارت درست سمت کی طرف بڑھ رہی ہے ۔ دونوں ممالک کے مابےن تجارتی حجم تےزی سے بڑھ رہا ہے جو ان دونوں کی معےشت کےلئے سود مند ہے ۔ ماضی مےں اگر پاکستان اور اسٹرےلےا کے مابےن تجارت کو اگر فروغ نہےں ملا تواس کی وجہ دونوں ممالک کے مابےن آمد ورفت کا بڑ فاصلہ ہے اس کے علاوہ دونوں ملکوں کے کاروباری طبقے کی پسند و ناپسند ہے لےکن اب یہ دورےاں رفتہ رفتہ ختم ہورہی ہےں ۔ پاکستان کی معےشت زراعت پر انصار کرتی ہے لےکن جب مےں اسٹرےلےا کی بات کروں تو اس کے پاس وسےع زرعی رقبہ ہے اور لائےو سٹاک بھی اس کا اہم حصہ ہے سبزےوں اور فصلوں کے ساتھ لائےو سٹاک کو بھی خاص اہمےت حاصل ہے پاکستان کو بھی اپنی زرعی اجناس کے فروغ کےلئے اقدامات کرنا ہونگے اس شعبے کے کاروباری کروپوں کے مفادات کو دےکھتے ہوئے پالےسےاں بنانا ہونگی تاکہ ملک کی زراعت کو ترقی ملے اور یہاں کا کسان خوشحال ہو ۔ڈےری کی ترقی کےلئے اسٹرےلےا پاکستان کے ساتھ تعاون کررہا ہے اور دودھ دےنے والی گاہےں اسٹرےلےا سے کراچی درآمد کی گئی ہےں ۔ اس سے پاکستان کی دودہ کی پےداوار بھی مذےدترقی کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ اسٹرےلےا کے پاس ڈےری کی بہت سی اقسام ہےں یہ اقسام بہترےن موےشےوں کی پےداوار کےلئے بہت اہم ہے اور دنےا کے ہر ملک اور ہر موسم کےلئے موزوں ہے اور ہمےں خوشی ہے کہ پاکستان مےں اسٹرےلےن تجربات سے استفادہ کےا جارہا ہے ڈےری کی ترقی سے پاکستان کی زراعت کو بھی زبردست استحکام ملے گا ۔ زراعت کی ترقی کےلئے پانی کو خاص اہمےت حاصل ہے ۔ پاکستان کوپانی کی دستےابی کو ےقےنی بنانا ہوگا آسٹرےلےا کی بہت سی کمپنےوں نے پاکستان کو پانی کےلئے اپنی ماہرانہ خدمات اور تعاون کی پےشکش کی ہے ۔ پانی کا حصول ، صارفےن تک اسے پہنچانا اور مستقل بنےادوں پر اس کی مےنجمنٹ بہت اہمےت کا حامل معاملہ ہے پاکستان کو اس پر توجہ دےنی ہوگی اور وےسے بھی زرعی ملک ہونے کی وجہ سے یہ پاکستان کےلئے ناگزےر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تجارت اور سرمایہ کاری کے ساتھ ساتھ زراعت ، وےٹرنری ، ڈےری اور مےٹ کے علاوہ تعلےم ، توانائی اور دےگر شعبوں مےں پاکستان اور آسٹرےلےا کے مابےن تعاون کے مواقع موجود ہےں اور اس پر کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ آسٹرےلےا کی زرعی شعبے مےں رےسرچ سے پاکستان کو استفادہ کرنا چاہےے ۔ انہوں نے کہا کہ آسٹرےلےا پاکستان کی تعمےر و ترقی کا خواہاں ہے اس کےلئے پاکستان حکومت کے ساتھ ملکر کام کررہے ہےں پاکستانی طلباءکو سکالر شپ مہےا کررہے ہےں اور اس سال ہم نے 70 سکالرز شپ مہےا کی ہےں ۔ پاکستان مےں تعلےم کے فروغ کےلئے کام کررہے ہےں اور مےری خواہش ہے کہ پاکستانی طلباءکی آسٹرےلےا مےں تعلےم کےلئے سکالر شپ مےں اضافہ کےا جائے ۔ ہائےر اےجو کےشن کمےشن کے ساتھ ملکرماسٹر ڈگری پروگرام مےں سکالر شپ مےں اضافہ کےا جائے گا ۔ اےک بات خوش آئند ہے کہ ہم نے خواتےن اور مرد کو برابری کی بنےاد پر سکالر شپ دی ہے ۔ اس سال 40 کے قرےب ماسٹر کےلئے آسٹرےلےن اےوارڈپروگرام کےلئے اسٹرےلےا روانہ کئے ہےں ، اسٹرےلےا نہ صرف ماسٹر پروگرام کےلئے بلکہ دوسرے پروگراموں کےلئے بھی سکالر شپ دے رہاہے جس سے پاکستان کی تعلےمی شرح مےں اضافہ ہوگا ہم طلباءکو بھر پور پےشہ ورانہ قابلےت کے مواقع فراہم کرےں گے کےونکہ یہ ہمارے پروگرام کا حصہ ہے ۔ ہم ہر مشکل کھڑی مےں پاکستان کے ساتھ کھڑے ہےں ۔ 2005 مےں پاکستان مےں ہونے والے زلزلہ اور سےلاب کے دوران پاکستان کا بھر پور ساتھ دےا اور 90ملےن آسٹرےلےن ڈالر کی امداد پاکستان کو دی ۔ جو کہ آسٹرےلےن عوام کی طرف سے پاکستان کے عوام کے لئے تھی حالیہ پاکستان مےں دہشت گردی کے واقعات مےں معصوم جانوں کے ضےاع کا پوری آسٹرےلےن عوام کو دکھ ہے ۔ انہوںنے کہا کہ پاکستان کی معےشت آہستہ آہستہ بہتری کی طرف بڑھ رہی ہے کےونکہ اس کا اکنامک رےفارم اےجنڈا بہت اہم ہے حال ہی ہےں ورلڈ بےنک کی سی ای او اور آئی اےم اےف کے وفد پاکستان آےا اور پاکستان کی اقتصادی ترقی کےلئے کی جانے والی کاوشوں کو سراہا ۔ انہوں نے کہا کہ ملکی معےشت کی ترقی کا دارومدار امن کے ماحوال سے وابستہ ہے کےونکہ سرمایہ کار ان ممالک کا رخ کرتے ہےں جہاں حالات ساز گار اور پر امن ہو۔ پاکستان اےک اہم ملک ہے اور آبادی زےادہ ہونے کی وجہ سے اس کی اہمےت اور بڑھ جاتی ہے لےکن آبادی کو کنٹرول اور محفوظ بنا کر ہی پاکستان کا مستقبل کو روشن کےا جاسکتا ہے ۔ پاکستان قدرتی وسائل سے مالا مال ہے اس کے موسم اس کی ثقافت اور تارےخی ورثہ اسے دنےا کے دےگر ممالک سے ممتاز کرتا ہے امرےکہ کے تھےنک ٹےنک سی آئی اے نے پاکستان کے سےکےورٹی حالات کو 60 فےصد ٹھےک قرار دےا ہے جو کہ پاکستان کےلئے حوصلہ افزا ءبات ہے ۔ چےن پاکستان اقتصادی راہداری کا منصوبہ خطے کی ترقی مےں اہم پےش رفت ہے اس سے کورےا ، چےن ، فرانس ، جاپان اور جرمنی تک اپنی گاڑےاں پاکستان مےں بنانے مےں دلچسپی لے رہے ہےں ہالےنڈ کے سرمایہ کار پاکستان کی زراعت مےں سرمایہ کاری کررہے ہےں جس کے بعد پاکستان مےں سرمایہ کاری کا رجحان بڑھ رہا ہے ۔ سی پےک سے پاکستان مےں معاشی ترقی کی نئی راہےں کھلےں گی دوسرے ممالک کی طرح آسٹرےلےن کمپنےاں بھی پاکستان مےں سرمایہ کاری کی خواہاں ہےں ۔ انہوں نے کہا کہ کرکٹ کے ساتھ ہاکی بھی اےسا کھےل ہے جس نے دونوں ملکوں کی عوام کو اےک دوسرے کے قرےب کردےا ہے ۔



خاص خبریں


US-dollar-rises

سائنس اور ٹیکنالوجی



تازہ ترین ویڈیوز



HEAD OFFICE
Khabrain Tower
12 Lawrance Road Lahore
Pakistan

Channel Five Pakistan© 2015.
© 2015, CHANNEL FIVE PAKISTAN | All rights of the publication are reserved by channelfivepakistan.tv